6

غیرقانونی تعمیرات پر کوئی رعایت نہیں دی جائے گی، پشاور ہائیکورٹ

پشاور: ہائیکورٹ کا کہنا ہے کہ معاملات عدالتوں میں پہنچ جاتے ہیں تو ادارے جاگتے ہیں، کیا عدالت سرکاری اداروں کا کام بھی کرے گی۔

ایکسپریس نیوزکے مطابق پشاور ہائی کورٹ میں رہائشی علاقے میں پلازے کی تعمیر کے خلاف دائر درخواست پر سماعت ہوئی، عدالت نے قافلہ روڈ یونیورسٹی ٹاؤن میں پلازے کی تعمیر پر کام روکنے کے احکامات جاری کردیئے۔

جسٹس قیصر رشید نے ریمارکس دیئے کہ سرکاری زمین پر کس طرح غیرقانونی پلازہ تعمیر کیا جارہا ہے ؟ معاملات عدالتوں میں پہنچ جاتے ہیں تو ادارے جاگتے ہیں، کیا عدالت سرکاری اداروں کا کام بھی کرے گی، ایجنسی برائے تحفظ ماحولیات بھی سورہی ہے ان کی کارکردگی بھی مایوس کن ہے۔…

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں